19

روائیتی حریف پاکستان اور بھارت کے درمیان چیمپئنز ٹرافی کا فائنل

گرین شرٹس نے انگلینڈ کو شکست دے کر ٹائٹل کی جانب پیش قدمی جاری رکھی تھی جبکہ بلو شرٹس نے بنگلہ دیش کو 9 وکٹ سے ہرایا۔ پاکستان ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ بولرز نے انگلینڈ کے خلاف بہترین کارکردگی دکھائی، فیلڈرز بھی بھرپور ساتھ دے رہے ہیں، بیٹنگ کی فارم بھی لوٹ آئی، سیمی فائنل میں سینئرز اظہر علی اور محمد حفیظ کے ساتھ بابر اعظم نے بھی عمدہ پرفارم کیا، فخر زمان مسلسل ٹیم کو جارحانہ آغاز فراہم کر رہے ہیں،امید ہے کہ یہی جذبہ اور کارکردگی برقرار رکھتے ہوئے فائنل بھی جیتیں گے۔

بھارتی کپتان ویرات کوہلی کا کہنا ہے کہ بیٹنگ اتنی مستحکم ہے کہ مڈل آرڈر کو میدان میں اترنے کی زحمت ہی کم کرنا پڑتی ہے، ٹیم تسلسل کے ساتھ بڑے اسکور بنا رہی ہے، بولرز بھی اچھی فارم میں ہیں، سیمی فائنل میں بنگلہ دیش کی بیٹنگ لائن کو کسی موقع پر بھی کھل کرنہیں کھیلنے دیا، پاک بھارت مقابلہ ہمیشہ بڑا ہوتا ہے لیکن ایک متوازن اسکواڈ کی موجودگی میں ہمیں ٹائٹل اپنے نام کرنے میں کوئی مشکل نہیں ہونی چاہیے۔

پاکستان ٹیم کے ساتھ میچ کا اضافی دباؤ ہونے کے سوال پر ویرات کوہلی نے کہا کہ بلو شرٹس پہلے بھی کئی بڑے مقابلوں میں پریشر جھیل کر سرخرو ہو چکے، میرا نہیں خیال کہ اس بار بھی ان کو کوئی پریشانی ہو گی، تمام کھلاڑی فائنل میچ کا بے تابی سے انتظار کر رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں